اوکاڑہ (بیورورپورٹ ) ڈپٹی کمشنر صائمہ احدنے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں انسداد پولیو مہم پر بھر پور توجہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ پاکستان سے اس مرض کا ہمیشہ کے لئے خاتمہ ہو سکے اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے ضلع اوکاڑہ گذشتہ سالوں سے پولیو فری ہے اور اس صورتحال کو بر قرار رکھنے کے لئے پانچ سال سے کم عمر کے بچوں کو انسداد پولیو ویکسئین کے قطرے پلانے کی مہم سو فیصد کامیاب ہونی چاہیے ۔ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے انسداد پولیو کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔اجلاس میں تینوں تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز، سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر سیف اللہ وڑائچ، ڈی ایچ او ڈاکٹر مہر محمد ارشاد ،سی ای او ایجوکیشن میڈم ناہید واصف،ایم ایس صاحبان ،صدر “ماڈا “محمد مظہررشید چوہدری ،الخدمت ویلفیئر کو نسل کے جنرل سیکرٹری ندیم مقصود سیدسمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔ ڈپٹی کمشنر صائمہ احدنے محکمہ صحت کے افسران کو ہدائیت کی کہ وہ آئندہ دنوں میں شروع ہونے والی پولیو مہم میں ضلع کے انٹری پوائنٹس پر خصوصی پوسٹس بنائیں بس اڈوں ویگن سٹینڈز ،ریلوے اسٹیشن پر محکمہ صحت کی فکسڈ ٹیمیں خدمات سر انجام دیں جبکہ ضلع میں موبائل ٹیمیں خانہ بدوشوں ،بھٹہ خشت پر کام کرنے والے مزدوروں کے بچوں کو انسداد پولیو ویکسئین کے قطرے پلائیں انہوں نے کہا کہ علماء مشائخ ،صحافی اور معاشرہ کے صاحب الرائے لوگ انسداد پولیو مہم میں خصوصی کاوشوں میں معاونت کریں تاکہ ضلع اوکاڑہ کی طرح پورے پاکستان کو پولیو فری بنایا جا سکے اس موقع پرسی ای او ہیلتھ ڈاکٹر سیف اللہ وڑائچ نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ انسداد پولیو مہم کے دورا ن 5لاکھ 56ہزار808بچوں کو انسداد پولیو ویکسئین کے قطرے پلائے جائیں گے جبکہ اس سلسلہ میں 1030موبائل ٹیمیں ،137فکسڈ ٹیمیں اور 59ٹرانزٹ پوائنٹس بنائے گئے ہیں*