فرینکفرٹ جرمنی ( اردولائن  )قونصلیٹ جنرل میں 7 اکتوبر کو کشمیر ڈے کے لئے بلائے گئے اجلاس میں ایک ناخوشگوار واقعہ پیش آنے کے بعد فرینکفرٹ اور گردو نواح میں بسنے والی پاکستانی کمیونٹی میں پائی جانے والی بے چینی کو مد نظر رکھتے ہوئے اس مسئلے کو احسن طریقے سے حل کرنے کے اور فریقین میں صلح صفائی کے لیے کمیونٹی کے چند سرکردہ افراد کچھ دنوں سے سر جوڑ کر بیٹھے ہوئے تھے تاکہ  آنے والے وقت میں کوئی بڑا سانحہ رونما نہ ہوسکے۔ سید خرم شاہ۔ مرزا راسد نسیم ۔ سید سجاد حسین نقوی ۔ طفیل حسین بٹ اور سید وجیہہ الحسن شاہ کی انتھک کوششوں سے گزشتہ روز فرینکفرٹ میں ایک پریس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں 40 کے قریب  افراد نے شرکت کی ۔حاضرین کو اظہار رائے اور اظہار خیال  موقع بھی دیا گیا جن افراد کو اظہار رائے اور اظہار خیال کا موقع دیا گیا ان میں مرزا راسد نسیم ۔ سید خرم شاہ ۔ سید رضوان شاہ۔ چوہدری فاروق شفیق ۔ ۔شیخ منیر۔ راجہ انجم حسین چوہان ۔ راجہ امجد نواز ۔حاجی پرویز  قابل ذکر ہیں ۔ حاضرین نے قونصل خانہ میں رونما ہونے والے واقعہ کی شدید مذمت کی اور چوہدری شفیق سے اظہار یکجہتی اور اظہار ہمدردی بھی کیا۔ اس موقع پر 5 رکنی کمیٹی کے قیام کا اعلان کیا گیا جو قونصل خانے سے مذاکرات کرے گی اور مذاکرات کے نتیجے میں ہونے والی پیش رفت سے کمیونٹی کو آگاہ کرے گی ۔ کمیٹی میں شامل افراد کے نام یہ ہیں ۔ سید خرم شاہ ۔مرزا راسد نسیم ۔ راجہ امجد نواز ۔سید وجیہہ الحسن شاہ جعفری ۔ چوہدری رفیق کارلسروہے۔ سید سجاد حسین نقوی نے پریس کانفرنس کا اعلامیہ پڑھ کر سنایا