ایکٹنگ کی تعلیم لندن سے حاصل کی ،اس دوران ایک ہوٹل میں ویٹر بھی رہا ٹھہر ٹھہر کر بولنے کا انداز معین اختر سے سیکھا، فن کسی بھی معاشرہ کاآئینہ دار ہوتا ہے

اداکار طلعت حسین نے کہا ہے کہ فن کسی بھی معاشرہ کاآئینہ دار ہوتا ہے مگر جب اخلاقی اقدار کی جگہ مادی فوائد لے لیں تو پھر فن کا چہرہ پیچھے رہ جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز سینما میں گیٹ کیپر کی حیثیت سے کیا تھا، کچھ دنوں بعد جب سینما مالک کو علم ہوا کہ یہ لڑکا انگریزی بھی بول لیتا ہے تو اس نے انہیں گیٹ بکنگ کلرک بنا دیا ، یہ ان کی زندگی کی پہلی ترقی تھی ۔ طلعت حسین نے کہا کہ انہوں نے ایکٹنگ کی تعلیم لندن میں حاصل کی ،اس دوران ایک ہوٹل میں ویٹر بھی رہے ۔ انہوں نے کہا ٹھہر ٹھہر کر بولنے کا انداز انہوں نے معین اختر سے سیکھا تھا ۔ بچپن میں انہیں گائیکی‘ مصوری اور کرکٹ کا شوق تھا ۔