ننکانہ صاحب( محمد قمر عباس)ٹھیکیدار سیوریج کی تعمیر کام ادھورا چھوڑ گیا ،علاقہ مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا ، آمد و رفت بند ہو نے سے علاقہ میں کاروباری سرگرمیاں ختم ہو کر رہ گئیں ،متاثرہ افراد کا ٹھیکیدار اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف احتجاج ،سیوریج اور سڑک کی تعمیر کا کام جلد مکمل کرنے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق ننکانہ صاحب کے علاقہ مانگٹانوالہ روڈ او ر چٹی کوٹھی روڈ پر ٹھیکیدار نے سیوریج کی پائپ لائن بچھانے کے لئے تین ماہ قبل سڑک اکھاڑی اور اس کے درمیان میں سیوریج کے پائپ بچھا دیئے مگر مذکورہ ٹھیکیدار سڑک کی تعمیر کا کام مکمل کئے بغیر ہی کام ادھورا چھوڑ کر چلا گیا ہے جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ،بارش کے بعد اس سڑک سے پیدل چلنا بھی ناممکن ہو جاتا ہے جبکہ علاقہ میں آمد ورفت نہ ہو نے کی وجہ سے کاروباری سرگرمیاں بھی ختم ہو کر رہ گئی ہیں اور لوگوں کے گھروں میں نوبت فاقوں تک آن پہنچی ہے علاقہ مکین بشیر گجر ،عرفان بٹ ،طارق مغل ،اللہ رکھا جٹ ، وسیم گجرا ور ارسلان گجر سمیت دیگر نے بتایا کہ مذکورہ سڑک پر چند دنوں کا کام تین ماہ سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود مکمل نہیں ہو سکا ،کچی سڑک پر بننے والے کھڈوں کو بھی ٹھیک نہیں کیا جا رہا ،چٹی کوٹھی روڈ پر چار رائس ملز ،ایک برف خانہ سمیت دیگر دوکانیں اور کاروباری مراکز بنے ہوئے ہیں جو گزشتہ تین ماہ سے آمد ورفت اور گاہک نہ ہو نے کی وجہ سے بند پڑے ہیں ،اہل علاقہ کے مطابق مذکوہ ٹھیکیدار سیاسی اثرو اسوخ کا حامل ہے جس کی وجہ سے ضلعی انتظامیہ اور اراکین اسمبلی سمیت کوئی بھی اس سے کام میں سست روی کا نہیں پوچھ رہا ،اہل علاقہ نے دھمکی دی ہے کہ اگر مذکورہ روڈ کی تعمیر کا کام جلد مکمل نہ کیا گیا تو وہ احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری ٹھیکیدار اور ضلعی انتظامیہ پر ہو گی ۔Road News 01-06-2017