358741_44537603راولپنڈی:  لیاقت باغ کی گورڈن کالج کالونی کا رہائشی چار دن کا نومولود بچہ بے نظیر اسپتال میں دم توڑ گیا۔ والدین کا کہنا ہے کہ پولیس کی جانب سے مری روڈ پر عوامی مسلم لیگ اور تحریک انصاف کے کارکنوں پر شدید شیلنگ کی گئی، آنسو گیس کا دھواں قریبی گھروں میں داخل ہو گیا جسے معصوم بچہ برداشت نہ کر سکا اور دم گھٹنے کے باعث اس کی حالت بگڑ گئی۔ والدین کا کہنا ہے کہ بچے کو بے نظیر بھٹو اسپتال لے جایا گیا مگر وہ راستے میں ہی دم توڑ گیا۔ میڈیکل رپورٹ نے والدین کے دعوے کی تصدیق کر دی ہے۔ بچے کو رات گئے نماز جنازہ کے بعد شاہ کی ٹالیاں قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا ہے۔ دوسری جانب، بے نظیر بھٹو اسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر آصف قادر میر نے دنیا نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے آنسو گیس کی شیلنگ کی وجہ سے بچے کی ہلاکت کی تردید کی۔ ان کا کہنا تھا کہ بچے کو شام چھ بجے مردہ حالت میں اسپتال لایا گیا۔ والدین کے مطابق، بچے کو صبح سے ہی سانس کی تکلیف تھی۔ ایم ایس کے مطابق، پوسٹ مارٹم کے بغیر موت کی وجہ نہیں بتائی جا سکتی۔ دوسری جانب، عمران خان نے پنجاب حکومت کو بچے کی موت کا ذمہ دار قرار دے دیا ہے