ننکانہ صاحب ( محمد قمر عباس )ننکانہ صاحب کے قصبہ بچیکی میں 2 اوباش نوجوانوں کی 9 سالہ بچی کے ساتھ مبینہ زیادتی کی کوشش ،پولیس مقدمہ درج ہو نے کے باوجود ملزمان کے خلاف کاروائی سے گریزاں ،متاثرہ خاندان کا پولیس نا انصافی کے خلاف شدید احتجاج ،ڈی پی او ننکانہ سے فوری نوٹس لینے اور انصاف کی فراہمی کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ بڑا گھر کے علاقہ بچیکی کے رہائشی محنت کش شمیر علی نے اپنی اہلیہ اور دیگر اہل خانہ کے ہمراہ میڈیا کو بتایا کہ 22 مئی کو اس کی 9 سالہ بیٹی قریبی دوکان پر سودا سلف لینے کے لئے گئی تو محلہ کے دو اوباش نوجوانوں محمد سہیل اور محمد عمران نے مبینہ طور پر اس سے زیادتی کی کوشش کی جسے اہل محلہ نے ناکام بنا دیا ،شمیر علی کے مطابق پولیس تھانہ بڑا گھر نے واقعہ کا مقدمہ تو درج کر لیا مگر تا حال ملزمان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی گئی ،شمیر علی نے الزام لگایا کہ مقدمہ کا تفشیشی اور انچارج پولیس چوکی بچیکی فیروز بھٹی نے ملزمان کے ساتھ ساز باز کر کے ہمارے ساتھ دوران تفتیش انتہائی ہتک آمیز رویہ روا رکھے ہوئے ہے جو قابل مذمت ہے ،انہوں نے مزید کہا کہ مقدمہ کا تفتیشی انصاف فراہم کرنے کی بجائے ملزما ن کو بچانے کی کوشش کر رہا ہے متاثرہ خاندان نے پولیس کے امتیازی سلوک کے خلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ننکانہ صاحبزادہ بلال عمر سے معاملے کافوری نوٹس لینے اور انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کیا ہے ۔ Protest Picture 02-06-2017