آسٹریا کی موجودہ مخلوط حکومت میں انتہائی دائیں بازو کی فریڈم پارٹی (FPÖ) بھی شامل ہے۔ اس پارٹی کے ایک اہم رہنما کو گیتوں کی ایک کتاب میں شامل نازیوں کی تعریف والے اشعار کے تناظر میں شدید تنقید کا سامنا ہفریڈم پارٹی کے جو لیڈر گیتوں کی کتاب کی وجہ سے متنازعہ بن گئے ہے، اُن کا نام اُوڈو لانڈباؤر (Udo Landbaue) ہیں۔ ایک جریدے ’فالٹر‘ نے رپورٹ کیا ہے کہ گیتوں کی کتاب ’ جرمانیا سُو وائنر نوئے اسٹٹ‘‘ دائیں بازو کے افراد میں بہت مقبول ہے۔ فالٹر جریدہ آسٹریا کا ایک مقبول ہفت روزہ ہے

اس کتاب ’جرمانیا سُو وائنر نوئے اسٹٹ‘‘ میں شامل بعض گیتوں کے اشعار پر لانڈ باؤر کو شدید نکتہ چینی کا سامنا ہے۔ وہ اپنی سیاسی جماعت کے نائب سربراہ ہیں۔ اس کتاب کی دوبارہ اشاعت میں وہ شامل بتائے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ کتاب اُن کے زیر استعمال بھی رہی ہے۔

کتاب میں شامل چند اشعار میں واضح طور پر نازیوں کی تعریف و توصیف بیان کی گئی ہے۔ ایک گیت کے الفاظ ہیں، ’’ وہ دیکھو یہودی بن گوریان آیا ہے، وہ گیس چیمبر کی دہلیز پر ہے، یہ قدیمی جرمن لوگ ہیں‘‘۔ اس کتاب کے مندرجات سامنے آنے پر انتہائی دائیں بازو کے سیاستدان پر تنقید کرنے والوں میں موجودہ مخلوط حکومت کے سربراہ سیباستیان کُرٹس بھی شامل ہیں۔ چانسلر کرٹس نے شاعری کی کتاب کی مذمت کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ یہ نسل پرستانہ، سامیت دشمنی اور واضح طور پر ملکی روایات سے انحراف ہے۔ کرٹس نے یہ بھی لکھا کہ ایسے خیالات کی آسٹریا میں کوئی گنجائش نہیں ہے۔ آسٹریائی چانسلر نے اس معاملے کی مکمل چھان بین کے ساتھ ساتھ ذمہ دار افراد کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کا بھی اظہار کیا ہ