352377_83229419ابوظہبی قومی کرکٹ ٹیم کی بہتر پوزیشن پر خوشی سے سرشار وکٹ کیپر سرفراز احمد ویسٹ انڈیز کیخلاف دوسرے ٹیسٹ کو جلد لپیٹنے کیلئے پرامید ہیں۔ گزشتہ روز میچ کے خاتمے پر ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم اچھی پوزیشن میں آچکی ہے تاہم ایک وکٹ مزید مل جاتی تو دن کا کام زیادہ بہتر طور پر مکمل ہو جاتا۔ سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ اٹھارہ اوورز کے بعد دوسری نئی گیند مل جائے گی اور اگرچہ اس وکٹ پر بالرز کو سخت محنت کرنا پڑی لیکن توقع ہے کہ اس میچ کو جلد ہی ختم کر لیا جائے گا۔ پاکستانی کپتان کی جانب سے اننگز ڈیکلیئرڈ کرنے سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ اس بات کو پیش نظر رکھا گیا کہ بالرز کو حریف ٹیم کی وکٹیں گرانے کیلئے مناسب وقت مل جائے کیونکہ وکٹ کافی حد تک سست ہو چکی ہے اور وہ نہیں چاہتے تھے کہ ایسی پوزیشن میں جا کر پھنس جائیں جہاں ایسا کرنا مشکل ہو جائے کیونکہ ماضی میں اس طرح کے واقعات سامنے آچکے ہیں۔ آخری دن کے کھیل میں 90 اوورز کے دوران چھ وکٹیں گرانے کے سوال پر سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ان کے پاس حریف کو ٹھکانے لگانے کا کافی وقت اور اوورز موجود ہیں اور ماضی میں یہ بھی دیکھنے میں آیا کہ یہاں زیادہ باؤنس ملنے لگتا ہے جب وکٹ ٹوٹنا شروع ہو جائے اور اس کا اندازہ یاسر شاہ کے آخری اسپیل میں ہو گیا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ نئی بال سے ایک یا دو وکٹیں جلد گرا دی گئیں تو باقی کام آسان ہو جائے گا۔ اسپیشلسٹ اسپنر ذوالفقار بابر کے غیر موثر کردار سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ زلفی بھائی ایک سالہ گیپ کے بعد دوبارہ کھیل رہے ہیں اور ان کا کردار بھی پہلے سے مختلف ہے کیونکہ یاسر شاہ اٹیک کر رہے ہیں جبکہ ذوالفقار بابر کو رنز روکنے کا کام سونپا گیا ہے جو اچھی بالنگ کر کے لیگ اسپنر کا ساتھ نبھا رہے ہیں۔