اسلام آباد: 358800_37314336 وزیراعظم محمد نواز شریف نے قومی سلامتی سے متعلق خبر کے لیک ہونے کے معاملے پر وزیر اطلاعات پرویز رشید کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا ہے۔ پرویز رشید کو خبر سے متعلق تحقیقات مکمل ہونے تک عہدے سے الگ رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ انگریزی اخبار کے رپورٹر کو معلومات کی فراہمی کے معاملے کی تحقیقات کیلئے آئی ایس آئی، ایم آئی اور آئی بی کے سینئر افسروں پر مشتمل کمیٹی بھی بنا دی گئی ہے۔ کمیٹی معلومات کی فراہمی کے مقاصد کا تعین بھی کرے گی۔ وزیر اعظم ہاؤس کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ انگریزی اخبار میں چھپنے والی خبر قومی سلامتی کے منافی تھی۔ اب تک کے شواہد کے مطابق پرویز رشید سے کوتاہی ہوئی۔ پرویز رشید کو معاملے کی تحقیقات مکمل ہونے تک عہدہ چھوڑنے کا حکم دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ عسکری قیادت نے قومی سلامتی کیخلاف خبر فیڈ کرنے پر ذمہ داروں کیخلاف تحقیقات اور کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔ جس کے جواب میں حکومت نے وعدہ کیا تھا کہ ذمہ داروں کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ سینئر تجزیہ کار کامران خان نے اس معاملے پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیراعظم نے بڑے مسئلے کو دور کر دیا ہے۔ یہ ایک بہت اہم ڈویلپمنٹ ہے۔ قومی سلامتی کیخلاف خبر کا ذریعہ پرویز رشید تھے۔ پرویز رشید نے ہی صحافی سیرل المیڈہ کیساتھ معلومات شیئر کی تھیں۔