پی ایس ایف آزاد  کشمیرسنٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کے رکن اذان جاوید راٹھور نے کہا ہے ضلع حویلی میں بھارتی افواج سول آبادی کو نشانہ بنا رہی ہے گزشتہ رات کی گولہ باری میں کروڑوں کا نقصان ہوا ہے متعدد مکانات مکمل طور پر تباہ ہو چکے ہیں اور کئ افراد زخمی ہوئے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا اذان جاوید راٹھور نے کہا اس ساری صورتحال پر حکومت آزاد کشمیر کی خاموشی پوری ریاست کے عوام کے لیے لمحہ فکریہ ہے۔یہ وقت رایونڈ کے دربار پر حاضری دے کر چاپلوسی کرنے کا نہیں بلکہ لائن آف کنٹرول پر بسنے والے ان ریاست کے غیور اور بہادر لوگوں اور متاثرین کی مالی معاونت اور اظہار یکجہتی کا ہے۔حکومت آزاد کشمیر فوری طور پر ضلع حویلی اور بلخصوص لائن آف کنٹرول پر بسنے والے گاؤں اور متاثرین کے کے لیے خصوصی پیکج کا اعلان کرے اور ان کے نقصانات کا ازالہ کرے۔انہوں نے کہا کہ پاک فوج لائن آف کنٹرول پر سیسہ پلائی کی دیوار کی ماند کھڑی ہے۔ اور بھارتی سورماؤں کو منہ توڑ جواب دے رہی ہے۔ بھارت کی جانب سے سول آبادی پر گولہ باری اس کی انتہائی بزدلانہ کاروائی ہے۔ کشمیریوں پر ظلم و ستم کی انتہا ہو چکی ہے۔ انشااللہ لاکھوں کشمیریوں کا خون ضرور رنگ لائے گا اور کشمیر جلد آزاد ہو گا۔ پاکستان کو بھی چاہیے کہ اپنی خارجہ پالیسی کو موثر بناتے ہوئے کشمیر کے مسلے کو دنیا کے سامنے اٹھائے۔ ملک کے نااہل حکمرانوں نے مسلہ کشمیر کو اپنی ناقص خارجہ پالیسی کی وجہ سے بہت نقصان پہنچایا ہے۔ بہر حال کشمیری اب جاگ چکے ہیں اور جس جرات و بہادری سے انہوں نے لڑنا شروع کیا ہوا ہے تو بہت جلد بھارت کشمیر کو چھوڑ کر بھاگنے پر مجبور ہو جائے گا۔