سرائے عالمگیر(صغیر راٹھور)ضلع گجرات کی سب سے چھوٹی تحصیل کا شہر سرائے عالمگیر جہاں مسائل ہر روز اخبارات کی زینت بنتے ہیں ارباب اختیار کی طرف سے حالات ٹھیک کرنے کی یقین دہانیاں اور بلے بلے کے بیانات بھی لگائے جاتے ہیں مگرانتظامیہ کی نا اہلی کی وجہ سے مسائل ہیں کہ کم ہونے کی بجائے آئے روز بڑھتے ہی جا رہے ہیں ہر طرف گندگی کے ڈھیر،سیوریج پائپ کا ناکام سسٹم، بروقت صفائی نہ ہونے کی وجہ سے گند اُبلتی نالیاں،اور چوکوں اورگلیوں میں لٹکتی بجلی کی ننگی تاریں،اندون شہر سمیت لواحی علاقوں کی طرف جانے والے راستوں میں سٹریت لائٹ نہ ہونے سے رات کو ہر طرف اندھیرے کا راج ایسے مسائل ہیں جن کا فوری حل ضروری اقدام تھا مگر ماشل لا دور آیا گزر گیا ناظمی دور میں صفائی کا نظام قدر بہتر ہواجبکہ اصل جمہوری نظام کے تحت قائم ہونے والے بلدیاتی نظام میں عوام کو شہرکے مسائل حل ہونے کی امید بندھی تھی لیکن شہر کی حالت دیکھ کر اندازہ ہوتاہے کہ نظام بلاچہرے بھی بدلے لیکن ارباب اختیار کی بے حسی کا مزاج نہیں بدلا اور آج بھی عوام کو گندگی زدہ بدبودار ماحول سے جان چھوٹی ہے نہ ہی گندگی سے صاف راستوں پر سفر کی خواہش پوری ہوئی ہے اور آج بھی بارشی پانی گھروں میں داخل ہوکر تباہی مچاتاہے رات کو اندھیرے میں اس ڈار سے باہر نہیں نکلتے کہ کوئی لوٹ لے گا یا بے خبری میں کسی گندی نالی یا گٹر میں گر نے سے نقصان نہ ہوجائے ،چھپراں کوٹیاں، عقب تھانہ نئی آبادی،محلہ خالدآباد ،محلہ بدر دین، محلہ عقب ڈگری گرلز کالج ،محلہ قصاباں، کھنڈاچوک ،مہے روڈ، محلہ شہیداں کے مکینوں کاسوال ہے کہ وفاقی ،صوبائی اورمقامی سطح پر مسلم لیگ ن کی حکومت ہے ہم نے ہمیشہ ن لیگ کی حکومت کو سپورٹ کیا، تمام اختیارات ہونے کے باوجود شہرمیں بنیادی سہولیات کا نہ ہونا انتظامیہ کی نا اہلی ہے یا ارباب اختیار کی بے حسی یہ عجیب سوال ہے جو تاحال جواب طلب ہے اور کوئی ذمہ داری لینے کو بھی تیار نہیں لوگوں کا کہناہے کہ آخر کب تک ہمیں ناکردہ گناہوں کی سزاپرجھیلنا ہوگی ۔