سفارتخانہ پاکستان، برلن
پریس سیکشن

 جرمنی میں پاکستان کے سفیر سید حسن جاوید نے کہا ہے کہ جرمن چھوٹے اور درمیانے درجے کی کمپنیاں پاکستان کی مارکیٹ میں دلچسپی لی رہی ہیں اور امید ہے کہ پاکستان ایشیا پیسیفِک ریجن میں ان کیلئے ایک اہم نقطہ نمو اور کاروباری مرکز کے طور پر ابھر کرسامنے آئے گا۔ وہ جرمنی کی حکمران پارٹی کرسچین ڈیموکریٹ یونین کی اکنامک کونسل کے ممبران سے خطاب کر رہے تھے ۔ پاکستان ایمبسی نے اِن ممبران کو پاکستان کی اقتصادی صورتِ حال اور سرمایہ کاری کی پالیسی کی حوالے سے بریفنگ کا اہتمام کیا تھا۔ سفیر پاکستان نے ممبران کو تفصیل کے ساتھ پاکستان کی موجودہ صورتِ حال اور اس کے قدرتی و انسانی وسائل کی دستیابی سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہمسایہ ملک چین کی 46 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری سے نہ صرف پاکستان بلکہ خطے کے تمام ممالک کو فائدہ پہنچے گا۔ سی ڈی یو اقتصادی کونسل کے صدر ڈاکٹر نِکولس برُول نے سفیرِ پاکستان اور پاکستان ایمبیسی کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اُن کا اور کونسل کے ممبران کےپاکستان کےمتعلق علم میں اضافہ ہوا ہے اور بہت سے حقائق سامنے آئے ہیں جو کہ میڈیا میں کبھی نہیں آتے۔ سفیرِ پاکستان نے سوال و جواب کی نشست کے دوران حاضرین کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے انڈیا پاکستان تعلقات کی موجودہ صورتِ حال اور ملک میں مذہبی انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خلاف حکومتِ پاکستان کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات پر بھی روشنی ڈالی۔