کیریئر کا آغاز 2004میں بالی ووڈ فلم سے بطورمعاون اداکارہ کیا ،2007میں تیلگو فلم چندا ماما کی کامیابی نے ٹاپ ہیروئنز میں شامل کردیا کاجل کی اس وقت سات سائوتھ انڈین فلمیں زیرتکمیل، جن میں تین تامل ،دو کنڈا اور دو تیلگو فلمیں شامل ہیں ، چار رواں سال ریلیز ہونگی

ممبئی: خوبرو اداکارہ کاجل اگروال بالی ووڈمیں کامیابی کے جھنڈے گاڑ نے کے بعد دوبارہ سائوتھ انڈین انڈسٹری میں مصروف ہوگئیں ۔اداکارہ آج کل اپنی تیلگو اور تامل فلموں کی شوٹنگ میں مصروف ہیں اور فی الحال ان کی کوئی بالی ووڈفلم ریلیز ہونے کے امکان نہیں ۔28سالہ اداکارہ نے فلمی کیریئر کا آغاز 2004میں بالی ووڈ فلم کیوں ۔۔ہوگیا نا؟ سے بطور معاون اداکارہ کیا تھا ۔اس فلم میں انہوں نے ایشوریہ رائے کی دوست کا کردار ادا کیا تھا لیکن اسی فلم میں انہوں نے اندازہ لگا لیا تھا کہ مہمان اداکارہ کی چھاپ لگ گئی تو کیریئر یہیں تک محدود ہو کر رہ جائے گا لہٰذا انہوں نے سائوتھ انڈین انڈسٹری کا رخ کیا ۔ پہلی فلم کے تین سال بعد یعنی 2007 میں ان کی پہلی تیلگو فلم لکشمی کلیانم ریلیز ہوئی ۔اس فلم نے باکس آفس پر بہت اچھا بزنس کیا اور یوں کاجل کا بطور ہیروئن کیریئر شروع ہوا۔ اسی سال ان کی ایک اور فلم چندا ماما کامیابی سے ہمکنار ہوئی جس نے انہیں ٹاپ ہیروئنز میں شامل کردیا ۔کاجل ایک بات بہت اچھی طرح جان چکی تھیں کہ بالی ووڈ میں قدم جمانے کے لئے بہت محنت درکار ہے لہٰذا انہوں نے دوچار سائوتھ فلموں کی کامیابی کے بعد بالی ووڈ میں قسمت آزمانے کی بجائے سائوتھ انڈین فلموں میں ہی مختلف کردار ادا کئے اور اپنی صلاحیتوں میں نکھار پیدا کیا ۔تھوڑے ہی عرصے میں کاجل سائوتھ انڈسٹری کی ایک ور سٹائل ہیروئن بن گئیں ۔انہوں نے دو درجن کے قریب سائوتھ انڈین فلموں میں بطور ہیروئن کام کیا جن میں زیادہ تر فلمیں کامیاب رہیں اور کاجل کو بہترین اداکارہ کے کئی ایوارڈز ملے ۔ان کی بلاک بسٹر فلموں میں مگادھیرا،ڈارلنگ،برندہ وانم ،مسٹر پرفیکٹ اور ویرا شامل ہیں۔ 2010اور2011کاجل کے لئے بہت لکی ثابت ہوئے ۔ان دو سالوں میں ریلیز ہونے والی ان کی فلموں نے باکس آفس پر دھوم مچائے رکھی اور انہوں نے مسلسل اپنی کامیابیوں کے جشن منائے۔ 2011میں بطور ہیروئن ان کی پہلی بالی ووڈ فلم سنگھم ریلیز ہوئی ۔اس فلم میں انہوں نے اجے دیوگن کے مقابل بہترین اداکاری کا مظاہرہ کیا اور انہیں بے پناہ پذیرائی ملی ۔فلم سنگھم سلمان خان کی فلم ریڈی کے ساتھ ریلیز ہوئی تھی اور ان دونوں فلموں میں کانٹے دار مقابلہ ہوا۔ دونوں فلموں کی باکس آفس کولیکشن زبردست رہی اور حیرت انگیز طور دونوں فلمیں بالی ووڈ کے 100کروڑ کلب میں شامل ہو گئیں ۔اس فلم میں کاجل کی عمدہ اداکاری کی وجہ سے انہیں بہترین نئی اداکارہ کے کئی ایوارڈز ملے ۔ان کی بہترین اداکاری اور پر کشش شخصیت کو دیکھتے ہوئے فلمی پنڈتوں نے انہیں بالی ووڈ کی صف اول کی اداکارائوں کے لئے خطرہ قرار دیا۔ بظاہر نظر آرہا تھا کہ کاجل اگروال نے بالی ووڈ میں کم بیک کرلیا ہے اور اب وہ دھڑا دھڑ فلمیں سائن کریں گی ۔اس بات کے روشن امکانات بھی نظر آرہے تھے کیونکہ سنگھم کی کامیابی کے بعد کئی بالی ووڈ ڈائریکٹرز نے انہیں اپنی فلموں میں کام کرنے کی پیشکش کی تاہم انہوں نے فوری طور پر کوئی فلم سائن نہیں کی ۔وہ دوبارہ سائوتھ چلی گئیں اور کچھ نئی فلموں کے علاوہ اپنی زیر تکمیل فلموں کی شوٹنگ میں مصروف ہو گئیں ۔2012میں ان کی پانچ سائوتھ انڈین فلمیں ریلیز ہوئیں جبکہ اس دوران انہوں نے ایک بالی ووڈ فلم سپیشل 26سائن کی ۔فلم سپیشل 26رواں سال کے آغاز میں ریلیز ہوئی جو کہ باکس آفس پر سنگھم جیسی تو نہ ثابت ہوسکی تاہم پذیرائی حاصل کرنے میں کامیاب رہی ۔اس فلم کو تنقیدی حلقوں کی طرف سے بھی بے پناہ پذیرائی ملی ۔کاجل کو یہ انفرادیت حاصل ہے کہ سائوتھ کی دیگر اداکارائوں کی طرح انہوں نے بریک تھرو ملنے کے بعد دھڑا دھڑ فلمیں سائن کرنے کی بجائے معیاری کام کرنے کو ہی ترجیح دی ۔ہندی فلموں کے شائقین انہیں ایک بار پھر کسی بالی ووڈ فلم میں دیکھنے کے منتظر ہیں تاہم ان کی کسی ہندی فلم کے ریلیز ہونے کے ابھی دور دور تک امکانات نہیں ۔ان کی اس وقت سات سائوتھ انڈین فلمیں تکمیل کے مراحل میں ہیں جن میں تین تامل ،دو کنڈا اور دو تیلگو فلمیں شامل ہیں ۔مذکورہ فلموں میں سے چار رواں سال ریلیز ہونگی ۔یہ بھی امید کی جارہی ہے کہ انہی فلموں میں سے پھر کسی کا ہندی ری میک بن سکتا ہے ۔